Exodus 13 Urdu

From Textus Receptus

Jump to: navigation, search
13 خرُوج

۱

اور خُداوند نے مُؔوسیٰ کو فرمایا کہ۔

۲

سب پہلوٹھوں کو یعنی جو بنی اِسرائیل میں خواہ اِنسان ہو خواہ حَیوان پہلوٹھی کے بچّے ہوں اُنکو میرے لئِے مُقدّس ٹھہرا کیونکہ وہ میرے ہیں۔

۳

اور مُؔوسیٰ نے لوگوں سے کہا کہ تُم اِس دِن کو یاد رکھنا جِس میں تُم مِصؔر سے جو غُلامی کا گھر ہے نِکلے کیونکہ خُداوند اپنے زورِ بازُو سے تُم کو وہاں سے نِکال لایا۔ اِس میں خمیری روٹی کھائی نہ جائے۔

۴

تُم ابیؔب کے مہینے میں آج کے دِن نِکلے ہو۔

۵

سو جب خُداوند تُجھ کو کنِعانیوں اور حِتّیوں اور اموریوں اور حویوں اور یبوسیوں کے ملک میں پہنچا دے جسے تُجھ کو دینے کی قَسم اُس نے تیرے باپ دادا سے کھائی تھی اور جِس میں دُودھ اور شہد بہتا ہے تو تُو اِسی مہینے میں یہ عِبادت کِیا کرنا۔

۶

سات دِن تک تو تُو بے خمیری روٹی کھانا اور ساتویں دِن خُداوند کی عِید منانا۔

۷

بے خمیری روٹی ساتوں دِن کھائی جائے اور خمیری روٹی تیرے پاس دِکھائی بھی نہ دے اور نہ تیرے مُلک کی حدُود میں کہِیں کُچھ خمیر نظر آئے۔

۸

اور تُو اُس روز اپنے بیٹے کو یہ بتانا کہ اِس دِن کو مَیں اُس کام کے سبب سے مانتا ہُوں جو خُداوند نے میرے لئِے اُس وقت کِیا جب مَیں مُلکِ مِصؔر سے نِکلا۔

۹

اور یہی تیرے پاس گویا تیرے ہاتھ میں ایک نِشان اور تیری دونوں آنکھوں کے سامنے ایک یادگار ٹھہرے تاکہ خُداوند کی شریعت تیری زُبان پر ہوکیونکہ خُداوند نے تُجھ کو اپنے زورِ بازُو سے مُلکِ مِصؔر سے نِکالا۔

۱۰

پس تُو اِس رسم کو اِسی وقت مُعیّن میں سال بسال مانا کرنا۔

۱۱

اور جب خُداوند اُس قََسم کے مُطابِق جو اُس نے تُجھ سے اور تیرے باپ دادا سے کھائی تُجھ کو کنعانیوں کے مُلک میں پہنچا کر وہ مُلک تُجھکو دے دے۔

۱۲

تو تُو پہلوٹھی کے بچّوں کو اور جانوروں کے پہلوٹھوں کو خُداوند کے لئِے الگ کر دینا۔ سب نر بچّے خُداوند کے ہونگے۔

۱۳

اور گدھے کے پہلے بچّے کے فِدیہ میں برّہ دینا اور اگر تُو اُسکا فِدیہ نہ دے تو اُسکی گردن توڑ ڈالنا اور تیرے بیٹوں میں جِتنے پہلوٹھے ہوں اُن سب کا فِدیہ تُجھ کو دینا ہوگا۔

۱۴

اور جب آیندہ زمانہ میں تیرا بیٹا تُجھ سے سوال کرے کہ یہ کیا ہے؟ تو تُو اُسے یہ جواب دینا کہ خُداوند ہمکو مِصؔر سے جو غُلامی کا گھر ہے بزورِ بازُو نِکال لایا۔

۱۵

اور جب فِؔرعون نے ہمکو جانے دینا نہ چاہا تو خُداوند نے مُلکِ مِصؔر میں اِنسان اور حَیوان دونوں کے پہلوٹھے مار دِئے اِسلئِے مَیں جانوروں کے سب نر بچّوں کو اپنی اپنی ماں کے رِحم کو کھولتے ہیں خُداوند کے آگے قُربانی کرتا ہُوں لیکن اپنے بیٹوں کے سب پہلوٹھوں کا فِدیہ دیتا ہُوں۔

۱۶

اور یہ تیرے ہاتھ پر ایک نِشان اور تیری پیشانی پر ٹیکوں کی مانِند ہوں کیونکہ خُداوند اپنے زورِ بازُو سے ہمکو مِصؔر سے نِکال لایا۔

۱۷

اور جب فِؔرعون نے اُن لوگوں کو جانے کی اِجازت دے دی تو خُدا اِنکو فلستیوں کے مُلک کے راستہ سے نہیں لے گیا اگرچہ اُدھر سے نزدِیک پڑتا کیونکہ خُدا نے کہا اَیسا نہ ہو کہ یہ لوگ لڑائی بھڑائی دیکھ کر پچھتانے لگیں اور مِصؔر کو لَوٹ جائیں۔

۱۸

بلکہ خُدا اِنکو چکّر کھِلا کر بحرِ قُؔلزم کے بیابان کے راستہ سے لے گیا اور بنی اِسرائیل مُلکِ مِصؔر سے مُسلّح نِکلے تھے۔

۱۹

اور مُؔوسیٰ یُوسُؔف کی ہڈّیوں کو ساتھ لیتا گیا کیونکہ اُس نے بنی اِسرائیل سے کہکر کہ خُدا ضُرور تُمہاری خبر لیگا اِس بات کی سخت قَسم لے لی تھی کہ تُم یہاں سے میری ہڈّیاں اپنے ساتھ لیتے جانا۔

۲۰

اور اُنہوں نے سکّاؔت سے کُوچ کر کے بیابان کے کنارے ایتاؔم میں ڈیرا کِیا۔

۲۱

اور خُداوند اُنکو دِن کو راستہ دِکھانے کے لئِے بادل کے ستُون میں اور رات کو روشنی دینے کے لئِے آگ کے ستُون میں ہو کر اُنکے آگے آگے چلا کرتا تھا تاکہ وہ دِن اور رات دونوں میں چل سکیں۔

۲۲

وہ بادل کا ستُون دِن کو اور آگ کا ستُون رات کو اُن لوگوں کے آگے ہٹتا نہ تھا۔

Views
Personal tools
Navigation
Toolbox