2 Samuel 6 Urdu

From Textus Receptus

Jump to: navigation, search
6 سموئیل-۲

۱

اور داؤُؔد نے پھِر اِسرائیلِیوں کے سب چُنے ہُوئے تِیس ہزار مَردوں کو جمع کِیا۔

۲

اور داؤُؔد اُٹھا اور سب لوگوں کو جو اُسکے ساتھ تھے لیکر بعلؔہ یہُوداہ سے چلا تا کہ خُدا کے صندُوق کو اُدھر سے لے آئے جو اُس نام کا یعنی ربُّ الافواج کے نام کا کہلاتا ہے جو کرُّوبِیوں پر بَیٹھتا ہے۔

۳

سو اُنہوں نے خُدا کے صندُوق کو نئی گاڑی پر رکھّا اور اُسے ابِینؔداب کے گھر سے جو پہاڑی پر تھا نِکال لائے اور اُس نئی گاڑی کو ابِینؔداب کے بیٹے عُزّؔہ اور اخؔیو ہانکنے لگے۔

۴

اور وہ اُسے ابِینؔداب کے گھر سے جو پہاڑی پر تھا خُدا کے صندُوق کے ساتھ نِکال لائے اور اخؔیو صندُوق کے آگے آگے چل رہا تھا۔

۵

اور داؤُؔد اور اِسؔرائیل کا سارا گھرانا صنَوبر کی لکڑی کے سب طرح کے ساز اور سِتار۔ بربط اور دف اور خنجری اور جھانجھ خُداوند کے آگے آگے بجاتے چلے۔

۶

اور جب وہ نکؔون کے کھلیِہان پر پُہنچے تو عُزّؔہ نے خُدا کے صندُوق کی طرف ہاتھ بڑھا کر اُسے تھام لِیا کیونکہ بَیلوں نے ٹھوکر کھائی تھی۔

۷

تب خُداوند کا غُصّہ عُزّؔہ پر بھڑکا اور خُدا نے وہِیں اُسے اُسکی خطا کے سبب سے مارا اور وہ وہِیں خُدا کے صندُوق کے پاس مَر گیا۔

۸

اور داؤُؔد اِس سبب سے کہ خُداوند عُزّؔہ پر ٹُوٹ پڑا ناخُوش ہُئوا اور اُس نے اُس جگہ کا نام پرؔض عُزّؔہ رکھّا جو آج کے دِن تک ہے۔

۹

اور داؤُؔد اُس دِن خُداوند سے ڈر گیا اور کہنے لگا کہ خُداوند کا صندُوق میرے ہاں کیونکر آئے؟۔

۱۰

اور داؤُؔد نے خُداوند کے صندُوق کو اپنے ہاں داؤُؔد کے شہر میں لے جانا نہ چاہا بلکہ داؤُؔد اُسے ایک طرف جاتی عؔوبیدادوم کے گھر لے گیا۔

۱۱

اور خُداوند کا صندُوق جاتی عؔوبیدادوم کے گھر میں تِین مِہینے تک رہا اور خُداوند نے عؔوبیدادوم کو اور اُسکے سارے گھرانے کو برکت دی۔

۱۲

اور داؤُؔد بادشاہ کو خبر مِلی کہ خُداوند نے عؔوبیدادوم کے گھرانے کو اُور اُسکی ہر چِیز میں خُدا کے صندُوق کے سبب سے برکت دی ہے۔ تب داؤُؔد گیا اور خُدا کے صندُوق کو عؔوبیدادوم کے گھر سے داؤُؔد کے شہر میں خُوشی خُوشی لے آیا۔

۱۳

اور اَیسا ہُئوا کہ جب خُداوند کے صندُوق کے اُٹھانے والے چھ قدم چلے تو داؤُؔد نے ایک بَیل اور ایک موٹا بچھڑا ذبح کِیا۔

۱۴

اور داؤُؔد خُداوند کے حضوُر اپنے سارے زور سے ناچنے لگا اور داؤُؔد کتان کا افُود پہنے تھا۔

۱۵

سو داؤُؔد اور اِسؔرائیل کا سارا گھرانا خُداوند کے صندُوق کو للکارتے اور نرسِنگا پُھونکتے ہُوئے لائے۔

۱۶

اور جب خُداوند کا صندُوق داؤُؔد کے شہر کے اندر آ رہا تھا تو ساؤُؔل کی بیٹی مِؔیکل نے کِھڑکی سے نِگاہ کی اور داؤُؔد بادشاہ کو خُداوند کے حضُور اُچھلتے اور ناچتے دیکھا۔ سو اُس نے اپنے دِل ہی دِل میں اُسے حقِیر جانا۔

۱۷

اور وہ خُداوند کے صندُوق کو اندر لائے اور اُسے اُسکی جگہ پر اُس خَیمہ کے بِیچ میں جو داؤُؔد نے اُسکے لئِے کھڑا کِیا تھا رکھّا اور داؤُؔد نے سوختنی قُربانیاں اور سلامتی کی قُربانیاں خُداوند کے آگے چڑھائِیں۔

۱۸

اور جب داؤُؔد سوختنی قُربانی اور سلامتی کی قُربانیاں چڑھا چُکا تو اُس نے ربُّ الافواج کے نام سے لوگوں کو برکت دی۔

۱۹

اور اُس نے سب لوگوں یعنی اِسؔرائیل کے سارے انبوہ کے مَردوں اور عَورتوں دونوں کو ایک ایک روٹی اور ایک ایک ٹُکڑا گوشت اور کِشمِش کی ایک ایک ٹِکیا بانٹی۔ پھِر سب لوگ اپنے اپنے گھر چلے گئے۔

۲۰

تب داؤُؔد لَوٹا تا کہ اپنے گھرانے کو برکت دے اور ساؤُؔل کی بیٹی مِؔیکل داؤُؔد کے اِستِقبال کو نِکلی اور کہنے لگی کہ اِسؔرائیل کا بادشاہ آج کَیسا شاندار معلُوم ہوتا تھا جِس نے آج کے دِن اپنے مُلازِموں کی لَونڈیوں کے سامنے اپنے کو برہنہ کِیا جَیسے کوئی بانکا بیحیائی سے برہنہ ہو جاتا ہے۔

۲۱

داؤُؔد نے مِؔیکل سے کہا یہ تو خُداوند کے حضُور تھا جِس نے تیرے باپ اور اُسکے سارے گھرانے کو چھوڑ کر مُجھے پسند کِیا تا کہ وہ مُجھے خُداوند کی قَوم اِسؔرائیل کا پیشوا بنائے۔ سو مَیں خُداوند کے آگے ناچُونگا۔

۲۲

بلکہ مَیں اِس سے بھی زِیادہ ذلِیل ہُونگا اور اپنی ہی نظر میں نِیچ ہُونگا اور جِن لَونڈِیوں کا ذِکر تو نے کِیا ہے وُہی میری عِزّت کر ینگی۔

۲۳

سو ساؤُؔل کی بیٹی مِؔیکل مَرتے دَم تک بے اَولاد رہی۔

Views
Personal tools
Navigation
Toolbox