1 Chronicles 13 Urdu

From Textus Receptus

(Difference between revisions)
Jump to: navigation, search

Erasmus (Talk | contribs)
(New page: {{Books of the Old Testament Urdu}} 13 تواریخ-۱ <big><div style="text-align: right;"><span style="font-family:Jameel Noori Nastaleeq;"> ۱ اور داؤُؔد نے اُن سردا...)
Next diff →

Current revision

13 تواریخ-۱

۱

اور داؤُؔد نے اُن سرداروں سے جو ہزار ہزار اور سَو سَو پر تھے یعنی ہر ایک سر لشکر سے صلاح لی۔

۲

اور داؤُؔد نے اِسرائؔیل کی ساری جماعت سے کہا کہ اگر تُمکو اچھّا لگے اور خُداوند ہمارے خُدا کی مرضی ہو تو آؤ ہم ہر جگہ اِسرائؔیل کے سارے مُلک میں اپنے باقی بھائیوں کو جِنکے ساتھ کاہِن اور لاوی بھی اپنے نواحی دار شہروں میں رہتے ہیں کہلا بھیجیں تا کہ وہ ہمارے پاس جمع ہوں۔

۳

اور ہم اپنے خُدا کی صندُوق پھِر اپنے پاس لے آئیں کیونکہ ہم ساؤُؔل کے ایّام میں اُسکے طالِب نہ ہُوئے۔

۴

تب ساری جماعت بول اُٹھی کہ ہم اَیسا ہی کرینگے کیونکہ یہ بات سب لوگوں کی نِگاہ میں ٹھِیک تھی۔

۵

تب داؤُؔد نے مِصؔر کی ندی سِیحُؔور سے حماؔت کے مدخل تک کے سارے اِسرائؔیل کو جمع کِیا تا کہ خُدا کے صندُوق کو قریت یعؔرِیم سے لے آئیں۔

۶

اور داؤُؔد اور سارا اسرائؔیل بعلؔہ کو یعنی قریت یعؔرِیم کو جو یہُؔوداہ میں ہے گئے تا کہ خُدا کے صندُوق کو وہاں سے لے آئیں جو کرُّوبیوں پر بَیٹھنے والا خُداوند ہے اور اِس نام سے پُکارا جاتا ہے۔

۷

اور وہ خُدا کے صندُوق کو ایک نئی گاڑی پر رکھکر ابِیندؔاب کے گھر سے باہر نِکال لائے اور عُزّؔا اور اخیُؔو گاڑی کو ہانک رہے تھے۔

۸

اور داؤُؔد اور سارا اِسرائؔیل خُدا کے آگے بڑے زور سے گِیت گاتے اور بربط اور سِتار اور دف اور جھانجھ اور تُرہی بجاتے چلے آتے تھے۔

۹

اور جب وہ کِیدُؔون کے کھلیِہان پر پُہنچے تو عُزّؔا نے صندُوق کے تھامنے کو اپنا ہاتھ بڑھایا کیونکہ بَیلوں نے ٹھوکر کھائی تھی۔

۱۰

تب خُداوند کا قہر عُزّؔا پر بھڑکا اور اُس نے اُسکو مار ڈالا اِسلئِے کہ اُس نے اپنا ہاتھ صندُوق پر بڑھایا تھا اور وہ وہِیں خُدا کے حضُور مَر گیا۔

۱۱

تب داؤُؔد اُداس ہُئوا اِسلئِے کہ خُداوند عُزّؔا پر ٹُوٹ پڑا اور اُس نے اُس مقام کا نام پرض عُزّؔا رکھّا جو آج تک ہے۔

۱۲

اور داؤُؔد اُس دِن خُدا سے ڈر گیا اور کہنے لگا کہ مَیں خُدا کے صندُوق کو اپنے ہاں کیونکر لاؤُں؟۔

۱۳

سو داؤُؔد صندُوق کو اپنے ہاں داؤُؔد کے شہر میں نہ لایا بلکہ اُسے باہر ہی باہر جاتی عوبیدادُؔوم کے گھر میں لے گیا۔

۱۴

سو خُدا کا صندُوق عوبیدادؔوم کے گھر انے کے ساتھ اُسکے گھر میں تِین مہِینے تک رہا اور خُداوند نے عوبیدادؔوم کے گھر اور اُسکی سب چِیزوں کو برکت دی۔

Views
Personal tools
Navigation
Toolbox