1 Chronicles 12 Urdu

From Textus Receptus

(Difference between revisions)
Jump to: navigation, search
(New page: {{Books of the Old Testament Urdu}} 12 تواریخ-۱ <big><div style="text-align: right;"><span style="font-family:Jameel Noori Nastaleeq;"> ۱ یہ وہ ہیں جو صِقلؔاج م...)
Current revision (08:51, 12 July 2019) (view source)
 
Line 61: Line 61:
یہ وہ ہیں جو پہلے مہِینے میں یَؔردن کے پار گئے جب اُسکے سب کنارے ڈُوبے ہُوئے تھے اور اُنہوں نے وادیوں کے سب لوگوں کو مشرِق اور مغرِب کے طرف بھگا دِیا۔  
یہ وہ ہیں جو پہلے مہِینے میں یَؔردن کے پار گئے جب اُسکے سب کنارے ڈُوبے ہُوئے تھے اور اُنہوں نے وادیوں کے سب لوگوں کو مشرِق اور مغرِب کے طرف بھگا دِیا۔  
 +
 +
۱۶
 +
 +
اور بنی بِنیمِین اور یہُؔوداہ میں سے کُچھ لوگ قلعہ میں داؤُؔد کے پاس آئے۔
 +
 +
۱۷
 +
 +
تب داؤُؔد اُنکے اِستقبال کو نِکلا اور اُن سے کہنے لگا اگر تُم نیک نِیّتی سے میری مدد کے لئِے میرے پاس آئے ہو تو میرا دِل تُم سے مِلا رہے گا پر اگر مُجھے میرے دُشمنوں کے ہاتھ میں پکڑوانے آئے ہو حالانکہ میرا ہاتھ ظُلم سے پاک ہے تو ہمارے باپ دادا کا خُدا یہ دیکھے اور ملامت کرے۔
 +
 +
۱۸
 +
 +
تب رُوح عماؔسی پر نازِل ہُوئی جو اُن تِیسوں کا سردار تھا اور وہ کہنے لگا ہم تیرے ہیں اَے داؤُؔد اور ہم تیری طرف ہیں اَے یسّؔی کے بیٹے! سلامتی تیری سلامتی اور تیرے مددگاروں کی سلامتی ہو! کیونکہ تیرا خُدا تیری مدد کرتا ہے۔ تب داؤُؔد نے اُنکو قبُول کِیا اور اُنکو فَوج کے سردار بنایا۔
 +
 +
۱۹
 +
 +
اور منسّؔی میں سے کُچھ لوگ داؤُؔد سے مِل گئے جب وہ ساؤُؔل کے مُقابِل جنگ کے لئِے فِلستیوں کے ساتھ نِکلا۔ پر اُنہوں نے اُنکی مدد نہ کی کیونکہ فِلستیوں کے اُمرا نے صلاح کرکے اُسے لَوٹا دِیا اور کہنے لگے کہ وہ ہمارے سر کاٹکر اپنے آقا ساؤُؔل سے جا مِلیگا۔
 +
 +
۲۰
 +
 +
جب وہ صِقلؔاج کو جا رہا تھا منسّؔی میں سے عدؔنہ اور یُؔوزباد اور یدؔی عیل اور مِیکاؔ ایل اور یُوزباد اور الؔیہو اور ضِلؔتی جو بنی منسّی میں ہزاروں کے سردا تھے اُس سے مِل گئے۔
 +
 +
۲۱
 +
 +
اُنہوں نے غارتگروں کے جھتے کے مُقابلہ میں داؤُؔد کی مدد کی کیونکہ وہ سب زبردست سُورما اور لشکر کے سردار تھے۔
 +
 +
۲۲
 +
 +
بلکہ روز بروز لوگ داؤُؔد کے پاس اُسکی مدد کو آتے گئے یہاں تک کہ خُدا کی فَوج کی مانِند ایک بڑی فَوج تیّار ہوگئی۔
 +
 +
۲۳
 +
 +
اور جو لوگ جنگ کے لئِے ہتھیار باندھکر حبرُؔون میں داؤُؔد کے پاس آئے تا کہ خُداوند کی بات کے مُوافِق ساؤُؔل کی مُملکت کو اُسکی طرف مُنتِقل کریں اُنکا شُمار یہ ہے۔
 +
 +
۲۴
 +
 +
بنی یہُوداہ چھ ہزار آٹھ سَو جو سِپر اور نیزہ لئِے ہُوئے جنگ کے لئِے مُسلّح تھے۔
 +
 +
۲۵
 +
 +
بنی شمعُون میں سے جنگ کے لئِے سات ہزار ایک سَو زبردست سُورما۔
 +
 +
۲۶
 +
 +
بنی لاوی میں سے چار ہزار چھ سَو۔
 +
 +
۲۷
 +
 +
اور یہؔویدع ہارُونیوں کا سردار تھا اور اُسکے ساتھ تِین ہزار سات سَو تھے۔
 +
 +
۲۸
 +
 +
اور صؔدوق ایک جوان سُورما اور اُسکے آبائی گھرانے کے بائِیس سردار۔
 +
 +
۲۹
 +
 +
اور ساؤُؔل کے بھائی بنی بِنیمِین میں سے تِین ہزار لیکن اُس وقت تک اُنکا بُہت بڑا حِصّہ ساؤُؔل کے گھرانے کا طرفدار تھا۔
 +
 +
۳۰
 +
 +
اور بنی افرائِیم میں سے بِیس ہزار آٹھ سَو زبردست سُورما جو اپنے آبائی خاندانوں میں نامی آدمی تھے۔
 +
 +
۳۱
 +
 +
اور منسّؔی کے آدھے قبِیلہ سے اٹھارہ ہزار جِنکے نام بتائے گئے تھے کہ آ کر داؤُؔد کو بادشاہ بنائیں۔
 +
 +
۳۲
 +
 +
اور بنی اِشکار میں سے اَیسے لوگ جو زمانہ کو سمجھتے اور جانتے تھے کہ اِسرائؔیل کو کیا کرنا مُناسِب ہے اُنکے سردار دو سَو تھے اور اُنکے سب بھائی اُنکے حُکم میں تھے۔
 +
 +
۳۳
 +
 +
اور زبُولُؔون میں سے اَیسے لوگ جو مَیدان میں جانے اور ہر قِسم کے جنگی آلات کے ساتھ معرکہ آرائی کے قابِل تھے پچاس ہزار۔ یہ صف آرائی کرنا جانتے تھے اور دو دِلے نہ تھے۔
 +
 +
۳۴
 +
 +
اور نفتالؔی میں سے ایک ہزار سردار اور اُنکے ساتھ سَینتِیس ہزار ڈھالیں اور بھالے لئِے ہُوئے۔
 +
 +
۳۵
 +
 +
اور دانِیوں میں سے اٹھائِیس ہزار چھ سَو معرکہ آرائی کرنے والے۔
 +
 +
۳۶
 +
 +
اور آشؔر میں سے چالِیس ہزار جو مَیدان میں جانے اور معرکہ آرائی کے قابِل تھے۔
 +
 +
۳۷
 +
 +
اور یَؔردن کے پار کے رُوبِینیوں اور جِدّیوں اور منسّؔی کے آدھے قِبیلہ میں سے ایک لاکھ بِیس ہزار جِنکے ساتھ لڑائی کے لئِے ہر قِسم کے جنگی آلات تھے۔
 +
 +
۳۸
 +
 +
یہ سب جنگی مَرد جو معرکہ آرائی کر سکتے تھے خُلوصِ دِل سے حبرُؔون کو آئے تا کہ داؤُؔد کو سارے اِسرائؔیل کا بادشاہ بنائیں اور باقی سب اِسرائیلی بھی داؤُؔد کو بادشاہ بنانے پر مُتّفِق تھے۔
 +
 +
۳۹
 +
 +
اور وہ وہاں داؤُؔد کے ساتھ تِین دِن تک ٹھہرے اور کھاتے پِیتے رہے کیونکہ اُنکے بھائِیوں نے اُنکے لئِے تیّاری کی تھی۔
 +
 +
۴۰
 +
 +
ماسِوا اِنکے جو اُنکے قرِیب کے تھے بلکہ اِشؔکار اور زبُولُؔون اور نفتالؔی تک کے لوگ گدھوں اور اُونٹوں اور خچّروں اور بَیلوں پر روٹیاں اور مَیدہ کی بنی ہُوئی کھانے کی چِیزیں اور انجِیر کی ٹِکیاں۔ اور کِشمِش کے گچھّے اور مَے اور تیل لادے ہُوئے اور بَیل اور بھیڑ بکریاں اِفراط سے لائے اِسلئِے کہ اِسرائؔیل میں خُوشی تھی۔
</span></div></big>
</span></div></big>
{{Donate}}
{{Donate}}

Current revision

12 تواریخ-۱

۱

یہ وہ ہیں جو صِقلؔاج میں داؤُؔد کے پاس آئے جب کہ وہ ہنوز قِؔیس کے بیٹے ساؤُؔل کے سبب سے چُھپا رہتا تھا اور وہ اُن سُورماؤں میں تھے جو لڑائی میں اُسکے مددگار تھے۔

۲

اُنکے پاس کمانیں تھِیں اور وہ فلاخن سے پتّھر مارتے اور کمان سے تِیر چلاتے وقت دہنے اور بائیں دونوں ہاتھوں کو کام میں لا سکتے تھے اور ساؤُؔل کے بِنیمِینی بھائیوں میں سے تھے۔

۳

اخؔیعزر سردار تھا۔ پھِر یُوآس بنی سماعہ جِبعاتی اور یزئؔیل اور فلؔط جو عزماؔوت کے بیٹے تھے اور بؔراکہ اور یاہُؔو عنتوتی۔

۴

اور اسماؔعیہ جِبعُونی جو تِیسوں میں سُورما اور اُن تِیسوں کا سردار تھا اور یِرمیاؔہ اور یحزِیئؔیل اور یُؔوحنان اور یُوزباؔد جِد یراتی۔

۵

اِلؔعوزی اور یرِیؔموت اور بعلؔیاہ اور سمؔریاہ اور سفطؔیاہ خروفی۔

۶

الؔقانہ اور یسیاؔہ اور عؔزرایل اور یُؔوعزر اور یسُؔوبِعام جو قُرحی تھے۔

۷

اور یُوعیلؔہ اور زیدؔیاہ جو یروحاؔم جدُوری کے بیٹے تھے۔

۸

اور جدّیوں میں سے بہتیرے الگ ہو کر بیابان کے قلعہ میں داؤُؔد کے پاس آ گئے۔ وہ زبردست سُورما اور جنگ آموختہ لوگ تھے جو ڈھال اور برچھی کا اِستعمال جانتے تھے۔ اُنکی صُورتیں اَیسی تھِیں جَیسی شیروں کی صُورتیں اور وہ پہاڑوں پر کی ہرنیوں کی مانِند تیز رَو تھے۔

۹

اوّل عؔزر تھا۔ عبدیاؔہ دُوسرا۔ اِلیاؔب تِیسرا۔

۱۰

مِسمنّؔہ چَوتھا۔ یِرمیاؔہ پانچواں۔

۱۱

عتّؔی چھٹا۔ الؔی ایل ساتواں۔

۱۲

یُؔوحنان آٹھواں۔ اِلؔزباد نواں۔

۱۳

یِرمیاؔہ دسواں۔ مکؔبانی گیارھواں۔

۱۴

یہ بنی جد میں سے سر لشکر تھے۔ اِن میں سب سے چھوٹا سَو کے برابر اور سب سے بڑا ہزار کے برابر تھا۔

۱۵

یہ وہ ہیں جو پہلے مہِینے میں یَؔردن کے پار گئے جب اُسکے سب کنارے ڈُوبے ہُوئے تھے اور اُنہوں نے وادیوں کے سب لوگوں کو مشرِق اور مغرِب کے طرف بھگا دِیا۔

۱۶

اور بنی بِنیمِین اور یہُؔوداہ میں سے کُچھ لوگ قلعہ میں داؤُؔد کے پاس آئے۔

۱۷

تب داؤُؔد اُنکے اِستقبال کو نِکلا اور اُن سے کہنے لگا اگر تُم نیک نِیّتی سے میری مدد کے لئِے میرے پاس آئے ہو تو میرا دِل تُم سے مِلا رہے گا پر اگر مُجھے میرے دُشمنوں کے ہاتھ میں پکڑوانے آئے ہو حالانکہ میرا ہاتھ ظُلم سے پاک ہے تو ہمارے باپ دادا کا خُدا یہ دیکھے اور ملامت کرے۔

۱۸

تب رُوح عماؔسی پر نازِل ہُوئی جو اُن تِیسوں کا سردار تھا اور وہ کہنے لگا ہم تیرے ہیں اَے داؤُؔد اور ہم تیری طرف ہیں اَے یسّؔی کے بیٹے! سلامتی تیری سلامتی اور تیرے مددگاروں کی سلامتی ہو! کیونکہ تیرا خُدا تیری مدد کرتا ہے۔ تب داؤُؔد نے اُنکو قبُول کِیا اور اُنکو فَوج کے سردار بنایا۔

۱۹

اور منسّؔی میں سے کُچھ لوگ داؤُؔد سے مِل گئے جب وہ ساؤُؔل کے مُقابِل جنگ کے لئِے فِلستیوں کے ساتھ نِکلا۔ پر اُنہوں نے اُنکی مدد نہ کی کیونکہ فِلستیوں کے اُمرا نے صلاح کرکے اُسے لَوٹا دِیا اور کہنے لگے کہ وہ ہمارے سر کاٹکر اپنے آقا ساؤُؔل سے جا مِلیگا۔

۲۰

جب وہ صِقلؔاج کو جا رہا تھا منسّؔی میں سے عدؔنہ اور یُؔوزباد اور یدؔی عیل اور مِیکاؔ ایل اور یُوزباد اور الؔیہو اور ضِلؔتی جو بنی منسّی میں ہزاروں کے سردا تھے اُس سے مِل گئے۔

۲۱

اُنہوں نے غارتگروں کے جھتے کے مُقابلہ میں داؤُؔد کی مدد کی کیونکہ وہ سب زبردست سُورما اور لشکر کے سردار تھے۔

۲۲

بلکہ روز بروز لوگ داؤُؔد کے پاس اُسکی مدد کو آتے گئے یہاں تک کہ خُدا کی فَوج کی مانِند ایک بڑی فَوج تیّار ہوگئی۔

۲۳

اور جو لوگ جنگ کے لئِے ہتھیار باندھکر حبرُؔون میں داؤُؔد کے پاس آئے تا کہ خُداوند کی بات کے مُوافِق ساؤُؔل کی مُملکت کو اُسکی طرف مُنتِقل کریں اُنکا شُمار یہ ہے۔

۲۴

بنی یہُوداہ چھ ہزار آٹھ سَو جو سِپر اور نیزہ لئِے ہُوئے جنگ کے لئِے مُسلّح تھے۔

۲۵

بنی شمعُون میں سے جنگ کے لئِے سات ہزار ایک سَو زبردست سُورما۔

۲۶

بنی لاوی میں سے چار ہزار چھ سَو۔

۲۷

اور یہؔویدع ہارُونیوں کا سردار تھا اور اُسکے ساتھ تِین ہزار سات سَو تھے۔

۲۸

اور صؔدوق ایک جوان سُورما اور اُسکے آبائی گھرانے کے بائِیس سردار۔

۲۹

اور ساؤُؔل کے بھائی بنی بِنیمِین میں سے تِین ہزار لیکن اُس وقت تک اُنکا بُہت بڑا حِصّہ ساؤُؔل کے گھرانے کا طرفدار تھا۔

۳۰

اور بنی افرائِیم میں سے بِیس ہزار آٹھ سَو زبردست سُورما جو اپنے آبائی خاندانوں میں نامی آدمی تھے۔

۳۱

اور منسّؔی کے آدھے قبِیلہ سے اٹھارہ ہزار جِنکے نام بتائے گئے تھے کہ آ کر داؤُؔد کو بادشاہ بنائیں۔

۳۲

اور بنی اِشکار میں سے اَیسے لوگ جو زمانہ کو سمجھتے اور جانتے تھے کہ اِسرائؔیل کو کیا کرنا مُناسِب ہے اُنکے سردار دو سَو تھے اور اُنکے سب بھائی اُنکے حُکم میں تھے۔

۳۳

اور زبُولُؔون میں سے اَیسے لوگ جو مَیدان میں جانے اور ہر قِسم کے جنگی آلات کے ساتھ معرکہ آرائی کے قابِل تھے پچاس ہزار۔ یہ صف آرائی کرنا جانتے تھے اور دو دِلے نہ تھے۔

۳۴

اور نفتالؔی میں سے ایک ہزار سردار اور اُنکے ساتھ سَینتِیس ہزار ڈھالیں اور بھالے لئِے ہُوئے۔

۳۵

اور دانِیوں میں سے اٹھائِیس ہزار چھ سَو معرکہ آرائی کرنے والے۔

۳۶

اور آشؔر میں سے چالِیس ہزار جو مَیدان میں جانے اور معرکہ آرائی کے قابِل تھے۔

۳۷

اور یَؔردن کے پار کے رُوبِینیوں اور جِدّیوں اور منسّؔی کے آدھے قِبیلہ میں سے ایک لاکھ بِیس ہزار جِنکے ساتھ لڑائی کے لئِے ہر قِسم کے جنگی آلات تھے۔

۳۸

یہ سب جنگی مَرد جو معرکہ آرائی کر سکتے تھے خُلوصِ دِل سے حبرُؔون کو آئے تا کہ داؤُؔد کو سارے اِسرائؔیل کا بادشاہ بنائیں اور باقی سب اِسرائیلی بھی داؤُؔد کو بادشاہ بنانے پر مُتّفِق تھے۔

۳۹

اور وہ وہاں داؤُؔد کے ساتھ تِین دِن تک ٹھہرے اور کھاتے پِیتے رہے کیونکہ اُنکے بھائِیوں نے اُنکے لئِے تیّاری کی تھی۔

۴۰

ماسِوا اِنکے جو اُنکے قرِیب کے تھے بلکہ اِشؔکار اور زبُولُؔون اور نفتالؔی تک کے لوگ گدھوں اور اُونٹوں اور خچّروں اور بَیلوں پر روٹیاں اور مَیدہ کی بنی ہُوئی کھانے کی چِیزیں اور انجِیر کی ٹِکیاں۔ اور کِشمِش کے گچھّے اور مَے اور تیل لادے ہُوئے اور بَیل اور بھیڑ بکریاں اِفراط سے لائے اِسلئِے کہ اِسرائؔیل میں خُوشی تھی۔

Views
Personal tools
Navigation
Toolbox